پاکستان میں 26 فیصد افراد ذیابیطس ٹائپ ٹوکے شکار

اسلام آباد... پاکستان کی آبادی کے 26 فیصد سے زائد لوگوں کو ذیابیطس ٹائپ ٹو کا مرض لاحق ہے جن کی عمریں 20 سال سے اوپر ہیں۔ 14.47 فیصد لوگوں کو ذیابیطس لاحق ہونے کا خطرہ موجود ہے۔ نیشنل ذیابیطس سروے آف پاکستان کی رپورٹ میں کہا گیا کہ ملک میںہائی بلڈ پریشر کا 52.6فیصد غلبہ موجود ہے ۔ 27.9فیصد معلوم کیسز اور 24.7فیصد کے نئے تشخیص شدہ کیسز موجود ہیں۔ یہ سروے پاکستان ہیلتھ ریسرچ کونسل نے بقائی انسٹی ٹیوٹ برائے اینڈو کرینالوجی کے تعاون سے جاری کیا ۔ مجموعی طور پر 10834 لوگوں کی ذیابیطس اسکریننگ ہوئی 43.9 فیصد مرد اور 56.1 فیصد خواتین تھیں۔ 30.2فیصد ذیابیطس کی خاندانی ہسٹری رکھتے تھے اور 4.5فیصد تمباکو نوشی کرتے تھے۔ تمام صوبوں میں شوگر لیول کے نتائج تقریباً ایک جیسے تھے تاہم بلڈ پریشر کے حوالے سے زیادہ اوسط بلوچستان اور کم اوسط خیبر پختونخوا میں سامنے آیا۔ دنیا میں ذیابیطس کے حوالے سے پاکستان کا چوتھا بڑا نمبر ہے۔
مزید پڑھیں:سابق حکمرانوں نے پاکستان کا پانی بھی بیچ دیا،گلالئی

شیئر: