حنیف عباسی کی سزا لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج

لاہور: ن لیگ کے رہنما حنیف عباسی کے وکلا نے ایفی ڈرین کوٹہ کیس میں عمر قید کی سزا لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کردی۔ ذرائع کے مطابق درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ عمر قید اور 10 لاکھ روپے جرمانے کی سزا معطل کر کے ضمانت پر رہا کیا جائے۔ حنیف عباسی کے وکیل اعظم نذیر تارڑ نے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کے روبرو دائر درخواست میں کہا ہے کہ انہوں نے پہلے راولپنڈی بنچ میں سزا چیلنج کی تھی تاہم ججز نے کیس کی سماعت سے معذرت کرلی تھی، جس کے بعد سے اب تک کوئی نیا بنچ نہیں آیا۔وکیل کا کہنا تھا کہ میرے موکل 6 ماہ سے جیل میں ہیں، لہٰذا لاہور ہی میں بنچ تشکیل دیا جائے اور اپیل کی سماعت کی جائے۔ چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے راولپنڈی بنچ سے مقدمے کی فائل طلب کرتے ہوئے کہا کہ آئندہ ہفتے لاہور میں خصوصی ڈویژن بنچ کیس کی سماعت کرے گا۔ واضح رہے کہ راولپنڈی کی انسداد منشیات عدالت نے گزشتہ برس 21 جولائی کو حنیف عباسی کو ایفی ڈرین کوٹہ الاٹمنٹ کیس میں انسداد منشیات کی دفعات کے تحت عمر قید کی سزا سنائی تھی۔
 
 

شیئر: