فن کے ذریعے سفارت کاری کرنے والی خاتون

رابعہ ذاکر نے رواں سال سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا پورٹریٹ بھی بنایا۔ فوٹو: ٹوئٹر
رابعہ ذاکر کو پاکستان کے سفارتی حلقوں میں ایک ایسی فنکارہ کے طور پر جانا جاتا ہے جن کی بنائی گئی پورٹریٹس عرب دنیا کے ساتھ پاکستان کے روابط کے لیے ایک پُل کا کردار ادا کر رہی ہیں۔
عرب نیوز کے مطابق رابعہ ذاکر نے رواں سال سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا بھی پورٹریٹ بنایا۔ 
انہوں نے سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین سمیت مشرق وسطیٰ میں شاہی خاندان کے افراد کے پورٹریٹس بنائے۔
ان کے بنائے گئے یہ پورٹریٹس اور خوبصورت نظاروں پر مبنی فن پارے پاکستان میں موجود 50 سفارت خانوں خصوصاً سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، کویت، بحرین اور اومان میں آویزاں ہیں۔

رواں سال جنوری میں رابعہ ذاکر کو سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا پورٹریٹ بنانے کا کہا گیا تھا، فوٹو: ٹوئٹر

رابعہ ذاکر کہتی ہیں کہ پاکستان اور سعودی عرب مذہبی اور ثقافتی لحاظ سے ایک رشتے میں بندھے ہیں۔ 
تاہم لسانی تفریق دونوں ممالک کے عوام کے درمیان رابطے اور ہم آہنگی میں ایک رکاوٹ ہے اس لیے وہ ایسی تمام رکاوٹوں کے خاتمے اور اسلامی دنیا سے ناطہ جوڑنے کے لیے ایک پُل کی طرح اپنے اس فن کو سفارت کاری کے اہم ذریعے کے طور پر استعمال کر رہی ہیں۔

رابعہ ذاکر نے سعودی عرب، یو اے ای اور بحرین سمیت مشرق وسطیٰ میں شاہی خاندان کے افراد کے پورٹریٹس بنائے، فوٹو: ٹوئٹر

رابعہ نے اپنے ایک انٹرویو میں عرب نیوز کو بتایا کہ ’دنیا بھر اور بیرونی سفارت خانوں میں میری یہ پینٹنگز پاکستان اور عرب دنیا کے درمیان ثقافتی روابط کو فروغ دے رہی ہیں۔‘
ان کے بقول ’سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے پورٹریٹ کے بعد لوگوں نے مجھے پہچاننا شروع کیا۔ مجھے بہت شاندار محسوس ہوتا ہے کہ نہ صرف پاکستان بلکہ ہمارے سعودی عرب کے قریبی دوستوں نے بھی میرے کام کو خوب سراہا۔‘
رابعہ ذاکر کا کام سب سے پہلے اسلامی ملک تیونس کے قومی دن کے موقعے پر 20 مارچ 2016 کو ایک آرٹ نمائش میں دکھایا گیا۔ اسی سال انہیں سعودی سفارت خانے کی جانب سے شاہ سلمان کا پورٹریٹ بنانے کی ذمہ داری دی گئی۔

رابعہ ذاکر کا کہنا ہے کہ نہ صرف پاکستان بلکہ سعودی عرب میں بھی ان کے کام کو سراہا گیا، فوٹو: ٹوئٹر

رواں سال جنوری میں رابعہ ذاکر کو سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا پورٹریٹ بنانے کا کہا گیا جو انہوں نے سعودی ولی عہد کے پاکستان کے دورے کے دوران سعودی سفیر نواف بن سعید المالکی کو پیش کیا۔
رابعہ ذاکر گورنر مکہ شہزادہ فیصل، عرب امارات کے صدر شیخ خلیفہ بن زید النیہان، وزیراعظم یو اے ای شیخ محمد بن راشد المکتوم اور ابوظبی کے ولی عہد محمد بن زید النیہان کے پورٹریٹس بھی بنا چکی ہیں۔

رابعہ ذاکر کی خواہش ہے کہ وہ وزیراعظم اور آرمی چیف کو ان کے پورٹریٹس خود پیش کریں، فوٹو: ٹوئٹر

راولپنڈی میں مقیم مصورہ نے کئی صدور، وزرائے اعظم کے پورٹریٹس بنائے ہیں تاہم، ان کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی ہورٹریٹس ان کا سب سے اہم اور قیمتی کام ہے۔
ذاکر نے بتایا کہ ’میری خواہش ہے کہ میں انہیں ذاتی طور پر یہ پورٹریٹس پیش کروں۔‘

شیئر: