خواتین کے لیے علیحدہ ساحل کا مطالبہ

ابوظبی اور دبئی کے طرز پر خواتین کیلئے ساحل مخصوص کرنے کا مطالبہ
سعودی فنکارہ اور صحافی لجین عمران نے مطالبہ کیا  ہے کہ متحدہ عرب امارات کے شہروں ابوظبی اور دبئی کے طرز پر سعودی عرب  میں  بھی خواتینکے لیے ساحل مخصوص کیے جائیں۔
سی این این کے مطابق لجین عمران نے  ٹویٹ کیا  ’میرے خیال سے سعودی عرب کے مختلف علاقوں میں خواتین کیلئے ساحل مخصوص کرنا ممکن ہے۔ دبئی اور ابوظبی  میں خواتین کے لیے ساحل مخصوص کرنے کے تجربات کامیاب ہو چکے ہیں۔ میں خود امارات میں خواتین کے ساحلوں کی سیر کر چکی ہوں۔ مجھے اچھا لگا۔ وہاں شاندار سہولتیں اور خواتین کی پرائیویسی کا بھی بڑا اچھا انتظام ہے۔ جلد ہی وطن عزیز سعودی عرب میں بھی اس جیسے منصوبے کی خوشخبری سننے کو ملے گی۔‘
لجین عمران نے ہیش ٹیگ #نریدشاطئی نسائی فی مناطق السعودیہ (ہم سعودی علاقوں میں خواتین کے لیے ساحل مخصوص کرنے کے خواہشمند ہیں) جاری کر دیا۔ سوشل میڈیا پر اس کے چرچے ہیں۔
بعض صارفین نے ہیش ٹیگ کی  حمایت اور دیگر نے  مخالفت کی۔ کئی لوگوں نے یاد دلایاکہ جدہ میں ایک ساحل خواتین کے لیے مخصوص ہے۔
جیلان البیات نے ٹویٹ کی کہ ’سعودی عرب کے تمام علاقوں میں موسم گرما کا مستقبل شاندار ہو جائے گا۔‘

لجین عمران نے ’ساحل مخصوص کرنے کے خواہشمند کا ‘ہیش  ٹیگ بھی جاری کیا

 ایک صارف منال نے ٹویٹ کیا کہ ’جی میرا تعلق روایتی علاقے سے ہے جہاں کے اپنے رسم و رواج ہیں۔ اگر میں جدہ خواتین کے ساحل کی سیرکے لیے جائوں تو وہاں تنہا کیا کروں گی۔ مملکت کے مشرقی اور مغربی علاقوں کی لڑکیوں ہی کا نہیں بلکہ پورے ملک کی خواتین کے لیے ساحل کا انتظام ہو، ہر علاقے میں خواتین کے لیے ساحل ہوں اورجہاں سمندر نہ ہو وہاں مصنوعی جھیلیں بنائی جائیں۔‘
سمر البیات نے ٹویٹ کیا کہ ’جی ہاں ہم خواتین کے لیے علیحدہ ساحل چاہتے ہیں۔‘

شیئر: