سعودی امداد نے چین میں کورونا وائرس سے نمٹنے میں مدد کی

یہ امداد دونوں ملکوں میں دوستانہ تعلقات کی مضبوطی ہے(فوٹو سوشل میڈیا )
سعودی عرب میں متعین چین کے سفیر چن وی نے کہا ہے کہ سعودی عرب کی طرف سے فراہم کردہ امداد نے چینی طبی عملے کو 'کورونا' وائرس سے نمٹنے میں بھرپور مدد فراہم کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کی امداد نے 'کورونا' وائرس سے نمٹنے میں چینی عوام کی حقیقی معنوں میں مدد کی ہے۔

چین کے لیے امدادی سامان ہنگامی بنیادوں پر روانہ کرنے کی ہدایت(فوٹو العربیہ)

العربیہ کے مطابق چینی سفیر چن وی نے ان خیالات کا اظہار شاہ سلمان ریلیف سینٹر کے ساتھ چھ معاہدوں پر دستخط کے موقع پر کیا۔ اس موقعے پر متعدد عالمی تنظیموں کی طرف سے بھی چین کو اس موذی 'کورونا' وائرس سے نمٹنے کے لیے طبی آلات اور دیگر ضروریات کی فراہمی کا معاہدہ کیا گیا ہے۔
خیال رہے کہ عالمی ادارہ صحت نے کورونا وائرس کا نام تبدیل کرکے 'کو فیڈ 19 'رکھا ہے تاکہ اس وائرس کو مخصوص جغرافیائی تفریق سے نکال کرایک عالمی وباء قرار دیا جا سکے۔
سعودی عرب کی سرکاری نیوز ایجنسی'ایس پی اے' کے مطابق سعودی عرب میں متعین چین کے سفیر نے کہا کہ مملکت کی طرف سے بیجنگ کی امداد دونوں ملکوں کے درمیان دوستانہ تعلقات کی مضبوطی ظاہر کرتی ہے۔
چینی سفیر کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کی طرف سے چین کو فراہم کی جانے والی امداد سے 'کوفیڈ 19 ' نامی اس وباء سے نمٹنے میں مدد ملے گی۔ چین سعودی عرب کی طرف سے فراہم کی جانے والی امداد کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے اور شکریہ ادا کرتا ہے۔
واضح رہے کہ خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے چین کے لیے امدادی سامان ہنگامی بنیادوں پر روانہ کرنے کی ہدایت کی تھی۔

شیئر: