طبی تحقیق وزن کم کرنے کے بارے میں کیا کہتی ہے

جسمانی وزن کم کرنے کے حوالے سے مختلف رپورٹس سامنے آتی رہتی ہیں جن میں لوگوں کو عجیب و غریب مشورے دیئے جاتے ہیں ۔ ٹھوس شواہد کی عدم موجودگی کی  بنا پر کسی بھی مشورے پر عمل کر لینا درست نہیں ۔ ‏سائنسی شواہد پر مشتمل وزن میں کمی کے طریقوں کو مؤثر طریقے سے اپنایا جاسکتا ہے ۔ بس اس کے لئے آپ کو مناسب طریقہ کار کا معلوم ہونا ضروری ہے ۔ 
سائنسی تحقیق کے مطابق کافی میں اینٹی آکسیڈنٹس کی مقدار بہت زیادہ ہوتی ہے جس سے متعدد طبی فوائد حاصل کئےجاسکتے ہیں ۔ کافی میں شامل کیفین جسمانی میٹابولزم کو تین سے گیارہ فیصد تک بڑھاتا ہے اور چربی پگھلانے کے عمل کو دس سے انتیس فیصد تک بڑھا دیتا ہے ۔ تاہم اس بات کو یقینی بنائیں کہ اس میں چینی یا زیادہ کیلوریز والے اجزا شامل نہ ہوں ورنہ یہ مشروب کوئی فائدہ نہیں پہنچا سکے گا ۔ 
غذا میں چینی کا اضافہ وزن کو بڑھانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے ۔ بیشتر افراد چینی کی بہت زیادہ مقدار کو جسم کا حصہ بنالیتے ہیں جس کے سبب وزن کو کنٹرول کرنا مشکل ہو جاتا ہے ۔ طبی سائنس کے مطابق چینی کا زیادہ استعمال موٹاپا ، ذیابیطس امراض قلب اور دیگر بیماریوں کا خطرہ بڑھا دیتا ہے ۔ جسمانی وزن میں کمی لانے کیلئے چینی کے استعمال میں کمی لانا ہوگی خاص طور پر باہر کی غذاؤں کو استعمال کرنے سے پہلے لیبل ضرور پڑھ لیں ۔ 
ریفائن کاربوہائیڈریٹس کا استعمال موٹاپے کی بڑی وجہ قرار دیا جاتا ہے ۔ یہ عام طور پر چینی اور اجناس جیسے سفید ڈبل روٹی اور پاستہ وغیرہ میں پائے جاتے ہیں جو بلڈ شوگر کو بہت تیزی سے اوپر لے جا کر بھوک ، اشتہا اور کھانے کی مقدار کو بڑھا دیتے ہیں ۔ وزن میں کمی لانے کے لیے ریفائن کاربوہائیڈریٹ کے استعمال میں کمی لانا ضروری ہے ۔
جسمانی وزن میں کمی کی بات ہو تو پروٹین سب سے اہم جز ہے ۔ پروٹین سے بھرپور غذا کا استعمال میٹابولزم کو بڑھاتا ہے اور زیادہ کیلوریز برن کرنے میں مدد دیتا ہے ۔ اس سے پیٹ بھرنے کا احساس بھی زیادہ وقت تک برقرار رہتا ہے جس کے نتیجے میں اوسطاً روزانہ 441 کیلوریز کے استعمال میں کمی واقع ہوتی ہے ۔ تحقیقات کے مطابق پروٹین کیلوریز میں 25فیصد کمی کا سبب بنتی ہیں ۔

شیئر: