قلوہ کا پاکستانی قیدی رہا ، سعودی نے دیت ادا کر دی

باحہ ۔۔۔ دیت ادا نہ کرنے کے باعث 44ماہ سے قید و بند کی صعوبت گزارنے والے پاکستانی ٹرک ڈرائیور ’’لاخمیر خان‘‘کو سعودی شہری نے اللہ کی رضا کیلئے مکمل دیت ادا کر کے رہا کروا دیا۔
سبق ویب سائٹ کے مطابق 3دن قبل پاکستانی شہری کی دیت کیلئے مقامی باشندوں نے خصوصی مہم شروع کی تھی ۔ انہوں نے اس مہم پر’’قلوہ کا قیدی  لاخمیر‘‘ دیا تھا۔
پاکستانی شہری نے قلوہ کی جیل میں 3سال 8ماہ گزارے۔لاخمیر خان مملکت پہنچنے کے 8ماہ بعد ہی ٹریفک حادثہ کا مرتکب ہو گیا تھا۔حادثے میں ایک بچی اور2خواتین ہلاک ہو گئی تھیں ۔ 
الحجرہ کمشنری میں مصالحتی کمیٹی کے رکن صقران السویدی نے کئی اہل خیر کے ساتھ ملکر دیت کی رقم جمع کرانے کی مہم چلائی تھی ۔ انہوں نے مقتول کے وارثوں سے بھی رابطہ کیا تھا ۔خان بوڑھے ماں باپ اور 4بیٹوں کا واحد کفیل تھا۔
 حادثے میں ایک بچی اور 2خواتین ہلاک ہو گئے تھے ۔ دیت کا مطالبہ 2لاکھ 25ہزار کا تھا تاہم رقم کم کرکے 74680ریال کر دی گئی تھی ۔ ایک مخیر شخصیت نے پوری رقم اس شرط پر پیش کی کہ اس کا نام کہیں نہ لیا جائے ۔ 
دیت کی رقم مہم کے پہلے ہی دن جمع کرا دی گئی تھی تاہم ہفت روزہ چھٹی کے باعث رہائی میں 2دن لگے ۔ خان کو اتوار کے روز اس کی کمپنی کے نمائندے کی موجودگی میں رہا کر دیا گیا ۔اس کے اقامہ کی تجدید بھی کر دی گئی ۔ کمپنی نے وعدے کے مطابق خان کو چھٹی پر بھی بھیج دیا ۔ 

شیئر: