’’تنصیبات میں نقصان کا معاوضہ انشورنس کمپنیاں نہیں دیں گی‘‘

نقصان کی رپورٹ ملنے پر تلافی کا فیصلہ کیا جائے گا (فوٹو: ایس پی اے)
سعودی وزیر توانائی شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان نے بتایا ہے کہ آرامکو کمپنی تیل تنصیبات پر حملوں کے نقصانات کی رپورٹ تیار کررہی ہے۔ انشورنس کمپنیاں تخریبی  سرگرمیوں یا جنگی و عسکری حملوں سے ہونے والے نقصان کا معاوضہ نہیں دیا کرتیں۔
اخبار 24کے مطابق وزیر توانائی نے بتایا ہے کہ آرامکو کی مجلس انتظامیہ نقصانات کا تخمینہ لگا کر فہرست تیار کررہی ہے جو حکومت کو پیش کی جائے گی۔ اسی کے بعد نقصانات کی تلافی سے متعلق فیصلہ کیا جائے گا۔

آرامکو کی مجلس انتظامیہ نقصانات کا تخمینہ لگا کر فہرست تیار کررہی ہے (فوٹو: العربیہ)

وزیر توانائی نے یہ بھی کہا ہے کہ تیل تنصیبات پر تخریبی حملے کے نتیجے میں سعودی عرب کی خام تیل کی پیداوار 50فیصد تک کم ہوگئی تھی۔ گزشتہ دو روز کے دوران نقصانات کی تلافی کرلی گئی اور پیداوار معطل ہونے سے جو نقصان ہوا تھا 50فیصد سے زیادہ پورا کرلیا گیا ہے۔
وزیر توانائی نے توجہ دلائی کہ سعودی عرب اس ماہ کے آخر تک 11ملین بیرل تیل یومیہ نکالنے لگے گا اور نومبر کے آخر تک 12ملین بیرل تیل نکالنے کی پوزیشن میں ہوگا۔
واٹس ایپ پر سعودی عرب کی خبروں کے لیے ”اردو نیوز“ گروپ جوائن کریں

شیئر: