Sorry, you need to enable JavaScript to visit this website.

اضافی ٹیکس لینے پر 14 سو سے زائد چالان 

یکم جولائی سے واٹ کی مد میں 10 فیصد مزید اضافہ کیا گیا ہے(فوٹو ٹوئٹر)
وزارت تجارت کا کہنا ہے کہ مملکت میں ویلیوایڈیڈ ٹیکس میں اضافے کے بعد سے اب تک مارکیٹوں کے 35 ہزار سے زائد دورے کیے گئے۔ 
سعودی عرب میں  یکم جولائی سے ویلیوایڈیڈ ٹیکس(واٹ) کی مد میں 10 فیصد مزید اضافہ کیا گیا ہے جس کے بعد اشیائے صرف پر 15 فیصد ویلیوایڈیڈ ٹیکس وصول کیا جاتا ہے۔ 
وزارت تجارت نے اس حوالے سے یقین دلایا ہے کہ ’واٹ‘ میں غیر قانونی اضافہ کرنے یا غلط طریقے سے صارفین سے اضافی رقم لینے والوں کےخلاف جامع کارروائی کی جاتی ہے۔

صارفین سے اضافی رقم لینے والوں کےخلاف جامع کارروائی کی جاتی ہے۔(فوٹو ٹوئٹر)

سبق ویب نیوز کے مطابق وزارت تجارت کا کہنا ہے کہ یکم جولائی 2020 سے 3 اگست 2020 تک سعودی عرب کے مختلف شہروں میں ٹیکس کی مد میں 1428 خلاف ورزیاں ریکارڈ کی جاچکی ہیں۔ 
ٹیکس خلاف ورزیوں کے حوالے سے وزارت کا کہنا تھا کہ تفتیشی ٹیموں کو اطلاعات ملی تھیں کہ بعض تاجر 15 فیصد ٹیکس اضافی لے رہے ہیں جس پر ٹیموں نے دکانوں اور مارکیٹوں کا دورہ کیا جہاں خلاف ورزیاں جاری تھیں ان کا چالان کیا گیا ہے۔ 

ٹیکس کی مد میں 1428 خلاف ورزیاں ریکارڈ کی جاچکی ہیں۔ (فوٹو سبق)

واضح رہے وزارت تجارت اس سے قبل بھی متعدد بار تاجروں کو متنبہ کرچکی ہے کہ 15 فیصد ویلیوایڈیٹ ٹیکس مصنوعات کی قیمت میں شامل ہے اس لیے وہی رقم صارفین سے وصول کی جائے جو مصنوعات پر درج کی گئی ہیں۔ 
 
اس ضمن میں وزارت تجارت نے دکانداروں اور سپر سٹورز مالکان کو سختی سے ہدایت کی ہے کہ صارفین سے اضافی رقم ٹیکس کی مد میں وصول نہ کی جائے۔ 
وزارت کی ہدایات کے مطابق دکاندار اس امر کے بھی پابند ہیں کہ وہ فروخت کی جانے والی اشیاء کی قیمتیں واضح طور پر درج کریں اور صارفین سے وہی قیمت وصول کی جائے جودرج ہو اس کے علاوہ اضافی ٹیکس کی مد میں رقم وصول کرنا خلاف قانون ہوگا۔ 
صارفین کو بھی وزارت نے ہدایت کی ہے کہ اگر کسی قسم کی خلاف ورزی ریکارڈ کریں تو اس بارے میں فوری طور پر وزارت تجارت کو مطلع کیا جائے۔
 

شیئر: