پہاڑ جیسا ہدف ، افغانستان کو 150 رنز سے شکست

ورلڈ کپ کے 24 ویں میچ میں میزبان انگلینڈ  نے افغانستان کو 150 رنز سے شکست دے دی۔

افغانستان کی بیٹنگ 

افغانستان نے اننگز کا آغاز کیا تو پہاڑ جیسا ہدف ان کے اعصاب پر سوار ہو گیا اوپنر نور علی بغیر کوئی رنز بنائے آرچر کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔دوسرے نمبر پر گلبدین 37 رنز بنا کر وڈ کا شکار بنے اس کے بعد رحمت شاہ نے ٹیم کے مجموعی سکور میں 46 رنز کا اضافہ کیا اور راشد کی بال پر بیرسٹو کو کیچ پکڑا دیا۔چوتھے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی اصغر افغان تھے انہوں نے 44 رنز بنائے اور راشد کی گیند پر روٹ نے انکا کیچ پکڑا۔ محمد نبی نے بھی خاص کارکردگی نہ دکھائی اور صرف نو رنز پر پویلین لوٹے۔ہشمت اللہ نے 76 رنز کی اننگز کھیلی مگر کسی کام نہ آئی اس کے بعد کوئی بھی کھلاڑی اچھا کھیل پیش کرنے میں ناکام رہا زدران 15 جبکہ راشد آٹھ رنز بنا کے آؤٹ ہوئے۔
انگلینڈ کی جانب سے آرچر اور راشد نے تین تین جبکہ وڈ نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

انگلینڈ کی بیٹنگ

مانچسٹر کے اولڈ ٹریفرڈ گراؤنڈ  میں کھیلے جانے والے میچ میں انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلتے ہوئے چھ وکٹون کے نقصان پر 397 رنز بنا لیے۔ انگلینڈ کی اننگز کی خاص بات مورگن کی برق ربتار بیٹنگ تھی۔ مورگن نے 71 گیندوں پر 148 رنز جوڑ دیے۔ 
انگلینڈ کی جانب سے جیمز ونس اور جونی بیرسٹو نے آج اننگز کا آغاز کیا جیمز ونس دسویں اوور میں 44 کے مجموعی سکور پر 26 رنز بنا کر دولت ذدران کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے جبکہ ان کے ساتھ اوپنر آنے والے بیرسٹو نے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ کیا اور 90 رنز بنائے گلبدین کی گیند پر ان ہی کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہو گئے۔  جے روٹ نے 82 گیندوں پر 88 رنز بنائے جبکہ بٹلر اور سٹوک دو دو رنز بنائے۔  
افغانستان کی جانب سے گلبدین اور دولت نے تین تین وکٹ حاصل کیں۔

موازنہ

ورلڈ کپ کے اب تک 11 ایڈیشنز کھیلے جا چکے ہیں جبکہ بارہواں جاری ہے۔ اس ورلڈ کپ میں انگلینڈ نے چار میچز کھیلے ہیں جن میں سے تین میں اسے فتح جبکہ ایک میچ میں شکست ہوئی ہے۔ اس کے مقابلے میں افغانستان نے چار میچز کھیلے ہیں اور کسی میں بھی کامیابی حاصل نہیں کی۔

ورلڈ کپ میں انگلینڈ نے تین میچز جیتے ہیں جبکہ ایک میں اسے شکست ہوئی ہے

 افغانستان کی ٹیم نے اس سے پہلے صرف ایک بار 2015 کا ورلڈ کپ کھیلا ہے۔ انگلینڈ اور افغانستان کی ٹیمیں اسی ورلڈ کپ میں ایک بار آمنے سامنے آئی تھیں جس میں ڈک ورتھ لوئس قانون کے تحت افغانستان کو نو وکٹوں سے شکست ہوئی۔ ون ڈے میں بھی دونوں ٹیموں کا اس میچ کے علاوہ کبھی آمنا سامنا نہیں ہوا۔
آئی سی سی رینکنگ میں انگلینڈ پہلے نمبر پر موجود ہے جبکہ افغانستان کا نمبر دسواں ہے لہٰذا یہ کہنا غلط نہ ہو گا کہ اگر افغانستان نے انگلینڈ کو ہرانا ہے تو تینوں شعبوں میں سخت محنت کرنا ہو گی۔

شیئر: