’تصاویر جنہیں دیکھ کر سیف کی جوانی یاد آگئی‘

سیف علی خان نے اپنے بیٹے کی پہلی بالی وڈ فلم آنے کا عندیہ دیا۔ فوٹو سوشل میڈیا
ویسے تو بالی وڈ سٹار سیف علی خان کا پورا خاندان ہی خبروں کا مرکز بنا رہتا ہے لیکن ان کے دونوں بیٹوں میں شائقین کی خصوصی دلچسپی رہتی ہے۔  
سیف علی خان کے کرینہ کپور کے ساتھ چھوٹے بیٹے تیمور علی خان نے تو پیدا ہوتے ساتھ ہی سوشل میڈیا سارفین میں متنازعہ بحث چیھڑ دی تھی۔ اکثر صارفین نے سیف اور کرینہ کو اپنے بیٹے کے نام کے انتخاب پر بے حد تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔ لیکن جب کرینہ نے اپنے بیٹے کی سلیٹی آنکھوں، سنہری بالوں اور موٹے گالوں والی تصویر سوشل میڈیا پر لگائی، تو شائقین اختلاف کے باوجود تیمور کے شیدائی ہو گئے۔
لیکن حال ہی میں جب سیف علی خان کے بڑے بیٹے ابراہیم علی خان پٹوڈی کی تصاویر میڈیا پر شیئر ہوئیں تو شائقین کو سیف علی خان کی جوانی یاد آ گئی۔ کسی نے کہا کہ یہ تو سیف علی خان کی فوٹو کاپی ہیں، تو کسی نے کہا ’لڑکا تو سیف پہ گیا ہے۔‘ ایک صارف نے سوال کیا کہ کیا سیف کو پھر سے لوڈ کیا جا رہا ہے؟
اٹھارہ سالہ ابراہیم علی خان کی سوشل میڈیا پر شیئر ہونے والی تصاویر دراصل ان کے پہلے فوٹو شوٹ کی ہیں جو انہوں نے اپنی اداکارہ بہن سارہ علی خان کے ساتھ کروایا۔ سارہ نے شوٹ کی تصاویر نہ صرف اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ بلکہ انسٹاگرام  پر بھی لگائیں۔

ابراہیم نے ہیلو میگزین کو انٹرویو میں بتایا کہ ان کا اپنے والد سیف علی خان کے ساتھ خاص رشتہ ہے اور سیف ان کے رہبر بھی ہیں۔ ابراہیم کا کہنا تھا کہ ان کو والد کے ساتھ حیران کن مماثلت پر اکثر لوگوں سے سننا پڑتا ہے۔ 

ویسے تو ابراہیم نے ابھی فلمی دنیا میں قدم رکھنے کی کوئی بات نہیں کی لیکن سیف علی خان نے حالیہ ایک انٹرویو میں ابراہیم کی پہلی فلم آنے کا عندیہ دیا تھا۔ سیف کا کہنا تھا کہ ابراہیم کو فلمی دنیا میں آنے کے بارے میں سوچنا چاہیے کیونکہ وہ ان سے زیادہ گڈ لکنگ ہیں۔
ابراہیم کی بڑی بہن سارہ کو تو ہمیشہ سے ہی فلموں میں آنے کا شوق تھا اور اب تک ان کی دونوں فلمیں باکس آفس پر بہت ہی کامیاب گئی ہیں۔

ابراہیم نے اپنی بہن سارہ کے ساتھ تعلق کے بارے میں بتایا کہ ان دونوں کے درمیان بہت ہی کم لڑائی ہوتی ہے اور اگر کبھی ہو بھی جائے تو انتہائی معمولی بات پر۔ ابراہیم نے کہا کہ ان کی بہن کے ساتھ تعلق بالکل ’پرفیکٹ‘ ہے۔
’ہم ایک دوسرے کے بہت قریب ہیں اور پیار بھی بہت کرتے ہیں۔‘

شیئر: