انسٹا گرام کا ہراسیت روکنے کے لیے نئے فیچر کا اعلان

انسٹا گرام آن لائن ہراسگی اور نفرت انگیز بیانات پر قابو پانے کے لیے نئے فیچرز متعارف کر وا رہا ہے۔ فوٹو: اے ایف پی
سماجی رابطوں کی ویب سائٹ انسٹا گرام نے آن لائن ہراسیت روکنے کے لیے نئے فیچر کا اعلان کیا ہے۔   
فیس بک کے زیر انتظام چلنے والی سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹ انسٹا گرام کے سربراہ ایڈم موسیری نے ایک بیان میں کہا ہے ' نیا فیچر صارف کو متنازعہ پوسٹ کرنے سے پہلے ہی متنبہ کر دے گا۔'
انہوں نے کہا ' انسٹا گرام پر صارفین کے لیے محفوظ ماحول بنانا کمپنی کی ذمہ داری ہے۔ یہ کچھ عرصے سے ہماری اولین ترجیح رہی ہے، اور ہم اس مسئلے کو بہتر سمجھنے اور اس سے نمٹنے کے لیے مسلسل سرمایہ کاری کر رہے ہیں۔‘
انہوں نے مزید کہا ' نئے فیچر سے لوگوں کو کومنٹ پوسٹ کرنے سے پہلے اپنے الفاظ پر نظرثانی کرنے اور کومنٹ کو منسوخ  کرنے کا موقع مل جائے گا، اور نامناسب کلمات دیگر صارفین تک پہنچنے سے بچ جائیں گا۔'
انسٹا گرام کے سربراہ کا کہنا تھا ' اس فیچر کو پہلے ٹیسٹ کیا گیا تھا، جس سے معلوم ہوا کہ اس فیچر نے چند لوگوں کو اپنا کومنٹ منسوخ کرنے اور کچھ ایسا شیئر کرنے کی حوصلہ افزائی کی تھی جو پڑھنے والوں کے لیے کم تکلیف دہ ہو۔'

انسٹا گرام کا نیا فیچر صارف کو متنازعہ کومنٹ پوسٹ کرنے سے پہلے ہی متنبہ کر دے گا۔ فوٹو: اے ایف پی

انسٹا گرام ’رسٹرکٹ‘ کے نام سے ایک اور فیچر بھی متعارف کرا رہا ہے جس کے ذریعے نازیبا کلمات کی تشہیر محدود کی جا سکے گی۔
انسٹا گرام کے سربراہ ایڈم موسیری نے کہا ' اکثر نوجوان اپنے جاننے والوں کے ساتھ حالات بگڑنے کے ڈر سے انہیں سوشل میڈیا کی ویب سائٹس پر بلاک یا ان کا نازیبا سلوک رپورٹ کرنے سے گریز کرتے ہیں لیکن اس نئے فیچر سے کسی بھی نامناسب شخص کو ’رسٹرکٹ‘ کر کے پروفائل تک محدود رسائی دی جا سکتی ہے۔ ایسا شخص ’نہ تو آپ کو انسٹا گرام پر ایکٹو دیکھ سکے گا اور نہ ہی اس کو یہ معلوم  ہو سکے گا کہ آپ نے اس کا بھیجا ہوا میسج پڑھ لیا ہے۔‘
ایڈم موسیری کا کہنا تھا ' ابھی اس نئے فیچر کا تجرباتی بنیادوں پر جائزہ لیا جا رہا ہے جس کے استعمال سے نازیبا کومنٹ صرف اس کے لکھنے والے کو ہی نظر آئے گا۔'
واض رہے کہ انسٹا گرام اس سے قبل بھی ایسے اقدامات کرتا رہا ہے جس سے نفرت انگیز بیانات اور نازیبا رویوں کو روکا جا سکے۔

شیئر: