ڈاکو سامان کے بجائے دعائیں لے گئے

علاقہ مکینوں کے مطابق ڈاکو دن کے وقت گھر میں گھسے۔ فوٹو:اے ایف پی
کراچی میں گذشتہ چند ماہ سے راہزنی، ڈکیتی اور قتل کی وارداتوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ کراچی پولیس کی جانب سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق کرائم ریٹ، جس میں پاکستان فوج کے آپریشن کے بعد خاطر خواہ کمی آئی تھی، اب اس میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔
ڈکیتی کا ایسا ہی ایک واقعہ گذشتہ روز کراچی کے علاقے کورنگی نمبر 5 میں پیش آیا جہاں ڈاکو ایک گھر میں ڈکیتی کی نیت سے گھس گئے مگر اچانک نہ جانے ان کے دل میں کیا خیال آیا کہ وہ کچھ بھی سامان لیے بغیر گھر سے چلے گئے۔
اطلاعات کے مطابق چار ڈاکو دن کے وقت ایک گھر میں ڈکیتی کی غرض سے گئے جہاں اس وقت صرف تین عورتیں موجود تھیں، جنہیں یرغمال بنا کر ڈاکوؤں نے لوٹ مار شروع کردی۔
علاقہ مکینوں کے مطابق دوران ڈکیتی جب ڈاکو ایک کمرے سے لوٹ مار کر کے دوسرے کمرے میں جانے لگے تو وہاں موجود ایک خاتون نے ان سے کہا کہ وہ جو سامان لے جانا چاہتے ہیں لے کر جائیں مگر ان کے سامنے آنے سے گریز کریں کیوں کہ ان کے شوہر کا دو ہفتے قبل انتقال ہوا ہے اور وہ عدت میں ہیں۔ 
یہ سن کر ڈاکوؤں نے لوٹا ہوا مال وہیں چھوڑ دیا اور گھر سے بنا کچھ لیے چلے گئے۔ علاقہ مکینوں کے مطابق ڈاکو جاتے جاتے گھر والوں سے ان کے حق میں دعا کرنے کا بھی کہہ گئے۔
ڈاکوؤں کے جانے کے بعد گھر والوں نے اہل محلہ کو اکھٹا کر کے انہیں واقعے کی روداد سنائی جس پر سب کو خوشگوار حیرت ہوئی۔ 
واقعے کے بعد کی وڈیو بھی منظر عام پر آئی ہے جس میں گھر والے یہ دکھا رہے ہیں کہ گھر کی الماری اور الماریوں سے سامان کھینچ کر زمین پر پڑا ہے تاہم نقدی، زیورات، موبائل فون اور دیگر قیمتی اشیا ٹیبل پر موجود ہیں اور انہیں ڈاکوؤں نے واپس کردیا ہے۔
پولیس سے جب اس واقعے کے حوالے سے پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ ایسا کوئی واقعہ ان کے پاس رپورٹ نہیں ہوا، اگر کوئی رپورٹ دائر ہوتی ہے تو وہ اس کی روشنی میں کارروائی کا آغاز کریں گے۔ 

شیئر: