’توجہ کا شکریہ لیکن پوسٹ کرنے سے پہلے حقیقت جان لیں‘

سوشل میڈیا کے فیکٹ چیک پر مبنی ٹویٹ گفتگو کا نیا موضوع بن گئی۔ فوٹو: مہوش حیات
سوشل میڈیا پر غلط اطلاعات کی دانستہ و نادانستہ موجودگی اور پھیلاؤ کوئی نئی بات نہیں تاہم بعض اوقات غیر ذمہ داری کا مظاہرہ اس وقت مہنگا پڑتا ہے جب کسی ویژول کو حقیقت جانے بغیر شیئر کریں اور اصل معاملہ کچھ اور نکل آئے۔
سوشل میڈیا بالخصوص ٹوئٹر پر مخصوص طرز فکر کی شناخت رکھنے والے طارق فتح کے ساتھ بھی ایسا ہی ہوا، جب انہوں نے پاکستان میں پولیو سے متعلق ایک ویڈیو شیئر کرنے کے ساتھ تبصرہ کیا کہ ’پاکستانی ماں نے پولیو رضاکاروں کو دیکھ کر دروازہ بند کر دیا اور ان پر چیخی چلائی۔‘ اپنے دعوے کے ثبوت کے طور پر انہوں نے ویڈیو میں بولے جانے والا ڈائیلاگ بھی نقل کیا۔
اس ویڈیو کو شیئر ہوئے زیادہ دیر نہیں ہوئی تھی کہ پاکستانی اداکارہ مہوش حیات فیکٹ چیک کے ساتھ سامنے آئیں اور ویڈیو کی حقیت بتاتے ہوئے اس کے اثرات پر بھی تبصرہ کیا۔
انہوں نے اپنی ٹویٹ میں لکھا کہ ’توجہ دینے کا شکریہ لیکن آئندہ کچھ پوسٹ کرنے سے پہلے حقیقت جان لیا کریں۔ یہ مناظر میری فلم لوڈ ویڈینگ کے ہیں، جہاں میں نے پولیو ورکر کا کردار ادا کیا جب کہ ایک اور خاتون اداکارہ بھی ہیں۔ فلم کے ذریعے ہم نے معاملے پر آگاہی پیدا کی۔ مجھے خوشی ہے کہ ہماری کارکردگی موثر رہی۔
فیکٹ چیک پر مبنی مہوش حیات کی ٹویٹ سامنے آنے کے بعد دیگر سوشل میڈیا صارفین بھی میدان میں کودے اور غلط دعوے کے ساتھ ویژول شیئر کرنے پر طارق فتح کو سخت سنا ڈالیں۔ شہاب نفیس نامی صارف نے لکھا کہ ’طارق فتح کو اب اپنا نام تبدیل کر کے تاریخی شکست رکھ لینا چاہیے۔‘

ماضی میں مہوش حیات کو سول اعزاز تمغہ امتیاز ملنے پر کچھ افراد نے وقتاً فوقتاً ناپسندیدگی کا اظہار کیا تھا تاہم اس فیصلے کا دفاع کرنے والوں کی بھی کمی نہیں رہی تھی۔ طارق فتح کی ٹویٹ پر ہوئے فیکٹ چیک کے بعد ’نیب دی ڈینٹسٹ‘ نامی صارف نے اپنا تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ ’تمغہ امتیاز کسی وجہ سے ملا ہے۔‘

مہوش اعجاز نامی صارف نے ٹوئٹر پر جاری گفتگو میں حصہ لیتے ہوئے لکھا کہ وہ ان مناظر کو دیکھتے ہوئے یہی سوچ رہی تھیں کہ یہ دیکھا دیکھا لگ رہا ہے، اسی دوران آپ (مہوش حیات) کی ٹویٹ دیکھ لی۔

37 سالہ پاکستانی اداکارہ مہوش حیات دل لگی، میرے قاتل میرے دلدار، مرات العروس نامی ڈراموں سمیت متعدد فلموں لوڈ ویڈنگ، پنجاب نہیں جاؤں گی اور ایکٹر ان لاء میں بھی کام کر چکی ہیں۔

مہوش حیات سوشل میڈیا پر جاری گفتگو میں فعال حصہ لینے والی سیلیبرٹی شمار کی جاتی ہیں۔ فوٹو: سوشل میڈیا

2019 میں حکومت پاکستان کی جانب سے تمغہ امتیاز حاصل کرنے والی مہوش حیات سوشل میڈیا بالخصوص ٹوئٹر پر فعال سیلیبریٹیز میں شمار کی جاتی ہیں۔

شیئر: