Sorry, you need to enable JavaScript to visit this website.

لوئر دیر میں جنازے کے دوران فائرنگ، سابق وزیر کے بیٹوں سمیت چھ افراد ہلاک

زخمیوں کو فوری طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کردیا گیا۔ (فوٹو: ٹوئٹر)
پاکستان کے صوبے خیبر پختونخوا کے علاقے لوئر دیر میں جنازے میں شریک دو فریقین کے درمیان چھ افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔
ریسکیو 1122 کی کی جانب سے اپنے ٹوئٹر ہینڈل پر جاری بیان میں کہا ہے کہ لوئر دیر میں فائرنگ سے چھ افراد ہلاک اور 18 زخمی ہوئے ہیں۔
 بیان کے مطابق لوئر دیر کے علاقے طور منگ میں فائرنگ کی اطلاع پر ریسکیو1122 کی چھ ایمبولینسز امدادی سرگرمیوں کے لیے روانہ کر دی گئی۔
ریکسیو 1122 کا کہنا تھا کہ اب تک 18 افراد کوہسپتال پہنچا دیا گیا ہے جن میں چھ افراد ہلاک اور 12 زخمی ہوئے ہیں۔
مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ طورمنگ درہ میں جنازے میں شریک دو فریقین کے درمیان فائرنگ ہوئی جس سے چھ افراد ہلاک اور 15 زخمی ہوئے۔
زخمیوں کو فوری طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کردیا گیا۔
پولیس کے مطابق فائرنگ سے ہلاک ہونے والے افراد میں سابق صوبائی وزیر ملک جہانزیب کے دو بیٹے بھی شامل ہیں جو جنازے میں شریک تھے۔  
سابق وزیر کے دونوں بیٹے مبینہ طور پر فریقین کی فائرنگ کی زد میں آئے۔
پولیس کا کہنا ہےکہ فائرنگ کی زد میں آنے والے بعض زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے جنہیں پشاور منتقل کردیا گیا ہے۔

شیئر: