’تعلقات میں بہتری کے لیے پاکستان کا دورہ کروں گا‘ افغان صدر

اشرف غنی کے بقول دورے کا مقصد پاکستان اور افغانستان کے درمیان بے اعتمادی کو ختم کرنا ہے۔ فوٹو، اے ایف پی
افغانستان کے صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ وہ پاکستان اور افغانستان کے مابین تعلققات میں نیا باب شروع کرنے کے لیے 27 جون کو پاکستان کا دورہ کریں گے۔
اشرف غنی نے عیدالفطر کے مبارکباد کے پیغام میں پاکستان کے دورے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ان کی وزیراعظم عمران خان سے سعودی عرب میں منعقدہ او آئی سی اجلاس کے موقعے پر ملاقات ہوئی تھی جس میں انہوں نے پاکستان کے دورے کی ہامی بھری تھی۔
اشرف غنی نے آئندہ دورے کے حوالے سے کہا کہ انہیں امید ہے کہ ’یہ مثبت دورہ ہوگا۔‘
افغان صدر نے مزید کہا ہے کہ وہ ہمسایہ ملک پاکستان کا دورہ اس کے ساتھ موجودہ تعلقات کو ٹھیک کرنے اور دونوں ممالک کے مابین تعلقات کا نیا باب شروع کرنے کی غرض سے کریں گے۔ اشرف غنی کا کہنا ہے کہ دورے کا مقصد پاکستان اور افغانستان کے درمیان بے اعتمادی اور الزام تراشی پر مبنی تعلقات کو بھی ٹھیک کرنا ہے۔

اشرف غنی او آئی سی اجلاس کے دوران عمران خان سے ملے تھے
اشرف غنی او آئی سی اجلاس کے دوران عمران خان سے ملے تھے۔ فوٹو، اے ایف پی

خیال رہے کہ افغانستان کی جانب سے پاکستان پر افغان طالبان کو پناہ دینے کا الزام لگایا جاتا رہا ہے۔ تاہم گزشتہ چند ماہ سے پاکستان، امریکہ کی افغانستان میں جاری جنگ کو ختم کرنے میں مدد کر رہا ہے اور طالبان اور امریکی حکومت کے درمیان مذاکرات کرانے میں بھی کردار ادا کرتا رہا ہے۔
اس کے ساتھ پاکستانی حکومت ہمیشہ ہی ان الزامات کی تردید کرتی رہی ہے کہ افغان طالبان کو پاکستان کی پشت پناہی حاصل ہے۔ 

شیئر: