جب کوہلی نے انوشکا کو ہائی ہیل پر جوک سنایا

کوہلی کے مطابق انوشکا اور ان میں بہت سی چیزیں مشترک ہیں۔ انسٹا گرام
انڈین کرکٹ ٹیم کے کپتان ویراٹ کوہلی اور ان کی بیوی اداکارہ انوشکا شرما انڈیا کے مشہور سلیبرٹی جوڑوں میں سے ایک ہیں جن کی نہ صرف پیشہ ورانہ بلکہ خانگی زندگی میں بھی ان کے کروڑوں مداحوں کی گہری دلچسپی ہوتی ہے۔
انوشکا شرما اور کوہلی کی محبت اور بعد میں شادی سے جڑی ہر خبر میں لوگوں کی بڑی دلچسپی رہی ہے۔ گو کہ انوشکا کوہلی کے ساتھ محبت اور بعد میں شادی کے حوالے سے اپنے مداحوں کے ساتھ تفصیلات شیئر کرتی رہتی ہیں، کوہلی شاذ و نادر ہی اس حوالے سے بات کرتے ہیں۔
تاہم اب کوہلی نے اپنی محبت اور شادی کے حوالے سے تفصیلی گفتگو کی ہے۔ امریکی سپورٹس رپورٹر گراہم بنسنگر کے ساتھ انٹرویو میں انہوں نے انوشکا کے ساتھ رومانس، شادی اور شادی کے بعد کی زندگی پر تفصیلی گفتگو کی ہے۔

انٹرویو کے دوران کوہلی کا کہنا تھا کہ جب وہ پہلی مرتبہ انوشکا سے مل رہے تھے تو زیادہ نروس تھے

انٹرویو کے دوران کوہلی کا کہنا تھا کہ جب وہ پہلی مرتبہ انوشکا سے مل رہے تھے تو زیادہ نروس تھے۔ ’اس لیے میں نے انوشکا سے ملتے ہی فوراً ان کو جوک سنایا۔‘
’میری سمجھ میں کچھ نہیں آرہا تھا کہ کیا کروں اس لیے میں نے ملتے ہی جوک سنایا، میں نے سوچا کہ میں فنی بن جاؤں۔‘
کوہلی کا کہنا تھا کہ انہوں نے ایسی بات کی جو بالکل نہیں کہنا چاہیے تھی۔ ’ انوشکا لمبے قد کی ہے اور اس نے ’ہائی ہیل‘ پہنی ہوئی تھی۔ جب وہ اندر آئی تو مجھ سے زیادہ لمبی لگ رہی تھی میں نے اس سے کہا کہ اور زیادہ ہائی ہیل نہیں ملی۔‘ اس پر انہوں نے کہا ’ایکسکیوز می‘ تو میں نے کہا کہ میں جوک کر رہا ہوں۔‘
کوہلی کے مطابق ان کا جوک ان کے لیے شرمندگی کا سبب بنا۔ ان کا کہنا تھا کہ اس ملاقات میں انوشکا پراعتماد تھیں۔

 

اس سوال پر کہ وہ اور انوشکا کیسے ایک جیسے ہیں؟ کوہلی نے کہا کہ ’ہم دونوں ایک جیسے بیک گراؤنڈ سے ہیں۔ دونوں کا تعلق مڈل کلاس فیملیز سے ہیں، ہم نے بڑی محنت کی اور اپنے کیرئیر بنائے اور ایک خاص سٹیج تک پہنچ گئے۔ جب ہم پیچھے اپنی زندگیوں کی طرف دیکھتے ہیں تو ایسا لگتا ہے کہ دونوں ایک رفتار سے جا رہے ہیں۔ میرے کرکٹ ڈیبیو کا سال 2008 ہے اور انوشکا نے بھی اپنی پہلی فلم کی شوٹنگ کا آغاز 2008 میں کیا تھا۔ تو ہماری آپس میں بہت ساری چیزیں مشترک تھیں۔‘
اس سوال پر کہ انہوں نے کیسے انوشکا کو پروپوز کیا کوہلی نے کہا کہ چیزیں سب اتنی منظم انداز سے ہو رہی تھی کہ بس یہ بھی ہوگیا۔

شیئر: