سعودی خواتین کی باکسنگ میں دلچسپی

اس ورزشوں کے بعد خواتین کو دفاع میں مدد ملتی ہے۔ فوٹو ۔عرب نیوز
باکسنگ کو مشرقِ وسطیٰ یا ایشیا میں عموماً مردوں کا کھیل سمجھا جاتا ہے لیکن اب سعودی عرب میں بھی خواتین نے اس کھیل میں دلچسپی لینا شروع کر دی ہے۔
حال ہی میں ایک خاتون باکسر حالہ الحمرانی نے جدہ میں خواتین کو باکسنگ کے گُر سکھانے کے لیے ایک کوچنگ سنٹر کھولا ہے جس میں سعودی لڑکیوں نے حصہ لینا شروع کر دیا ہے۔

خواتین کو اپنے دفاع میں مدد ملتی ہے۔ فوٹو۔انسٹاگرام

حالہ الحمرانی نے عرب نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ’اس کھیل اور اس کے لیے کی جانے والی ورزشوں کے بعد خواتین کو اپنے دفاع میں مدد ملتی ہے اور وہ خود کو مضبوط اور بااختیار سمجھتی ہیں۔‘ 
حالہ الحمرانی نے بتایا ’ابتداء میں میرے لیے اپنے آپ کو چست اور مضبوط رکھنا اس کھیل میں حصہ لینے کا باعث بنا لیکن میں اس کے فروغ کے لیے بہت کچھ کرنا چاہتی تھی جس کے بعد میں نے کوچنگ کلاسز لیں اور مختلف کورسز اور ورکشاپس کے ذریعے اس پر عبور حاصل کیا اور اب کوچنگ کے ذریعے دوسری خواتین کی مدد کرنے کا فیصلہ کیا۔‘

 

41 سالہ حالہ نے بتایا کہ ’میں خود خاتون ہوں لیکن مجھے یہ کھیل پسند ہے اور میں چیزوں کو مکے مارنا پسند کرتی ہوں۔‘
انہوں نے عرب نیوز کو بتایا کہ میں نے اس سلسلے میں سعودی عرب کے مختلف شہروں میں اس مردانہ کھیل کے حوالے سے مختلف مباحشوں میں بھی حصہ لیا ہے۔ جس میں خواتین کے ساتھ اس پر بات کی جاتی ہے کہ عورت ہونے کے ساتھ ساتھ اپنے آپ کو بااختیار اورمضبوط بنانے اور ایسے دفاعی کھیل میں حصہ لینا کیسے ممکن بنایا جا سکتا ہے۔

خواتین کو حفاظت کے لیے مردوں پر انحصار کرنا ضروری نہیں۔ فوٹو۔انسٹاگرام

سعودی عرب میں ویژن 2030کے تحت صحت اور فلاح وبہبودکے منصوبوں پر بھی بھرپور تودجہ دی جا رہی ہے جس کا مقصد نوجوان نسل میں خاص طور پر لڑکیوں کو تندرستی کے ساتھ ساتھ اپنے اعصاب مضبوط بنانے میں بھی مدد ملتی ہے ۔
حالہ نے بتایا کہ "خواتین کو بااختیار بنانے کے اس عمل کو لوگوں نے پسند کرنا شروع کر دیا ہے اور اس کی حمایت بھی کی جا رہی ہے۔اس کھیل کو سیکھ لینے کے بعد عام لوگوں کا خیال ہے کہ خواتین کو حفاظت کے لیے مردوں پر انحصار کرنا ضروری نہیں۔

جسمانی کے ساتھ ساتھ ذہنی نشوونما بھی ہوتی ہے۔ فوٹو۔انسٹاگرام

عام لوگوں کی اس سوچ کی وجہ سے ہمیں اس باکسنگ کے اس کھیل کو فروغ دینے میں مدد مل رہی ہے اور اس سے ہمارا کام مزید آسان ہو رہا ہے۔باکسنگ انتہائی مہارت پر مبنی کھیل ہے۔
خواتین کے لیے ایک بہت اچھی ورزش بھی ہے اس سے جسمانی کے ساتھ ساتھ ذہنی نشوونما بھی ہوتی ہے جس سے خواتین اپنے روز مرہ کے امور باآسانی انجام دے سکتی ہیں۔اپنے آپ کو فٹ رکھنے اور چست رہنے کے لیے خواتین کے لیے باکسنگ کی مشق انتہائی مفید عمل ہے ۔

شیئر: