امارات میں تیل اور گیس کے ذخائر دریافت

تیل کے نئے ذخائر دریافت ہونے سے عالمی منڈی میں امارات کی پوزیشن مضبوط ہوگئی ہے۔
ابوظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی افواج کے نائب سربراہ شیخ محمد بن زاید آل نہیان نے ملک میں تیل اور گیس کے نئے ذخائر دریافت ہونے کا اعلان کیا ہے۔
ابوظبی کے ولی عہد نے ’مربان ابوظبی‘ خام تیل کے نئے نرخنامے کی حکمت عملی بھی مقرر کی ہے۔
عاجل ویب سائٹ کے مطابق شیخ محمد بن زاید آل نہیان نے ٹویٹر پر قوم کو خوشخبری سنائی کہ ملک میں تیل اور گیس کے نئے ذخائر دریافت ہوئے ہیں جس سے تیل کی عالمی منڈی میں متحدہ عرب امارات کی پوزیشن مزید مضبوط ہوگئی ہے۔

تیل اور گیس کے ذخائر دریافت ہونے کا اعلان شیخ محمد بن زاید آل نہیان نے ٹویٹرپر کیا ہے۔ فوٹو عرب نیوز

شیخ محمد بن زاید نے بتایا کہ پیر کو ابوظبی میں پیٹرول کی سپریم کونسل کا بھی اجلاس ہوا جس میں مربان ابوظبی خام تیل کے نئے نرخنامے کی حکمت عملی مقرر کی گئی۔

یاد رہے کہ ابوظبی میں پٹرول کی سپریم کونسل 1988 میں قائم ہوئی تھی۔ یہ ریاست ابوظبی میں تیل امور کا سب سے بڑا ادارہ ہے۔ یہی ابوظبی کی تیل پالیسی مقرر کرتا ہے۔ علاوہ ازیں ’ادنوک‘ کی مجلس انتظامیہ کی ترجمانی کا اختیار بھی اسی کو حاصل ہے۔

ابوظبی کی نیشنل پٹرولیم کمپنی ’ادنوک‘ 1971ءمیں قائم ہوئی تھی۔ اس کا مقصد پٹرول اور گیس کے تمام شعبوں کے امور نمٹانا ہیں۔ 

خام تیل کے نئے نرخنامے کی حکمت عملی بھی مقرر کی ہے۔ سوشل میڈیا

’ادنوک‘ نے کئی ذیلی آئل کمپنیوں پر مشتمل ایک گروپ بھی قائم کیا ہے۔ آئل ریفائنری اور گیس کے شعبوں میں صنعتوں کا ایک جال بھی بچھا رکھا ہے۔
ادنوک کمپنی یومیہ 27 لاکھ بیرل تیل سے زیادہ کی پیداوار کی نگراں ہے۔ اس کی بدولت یہ پوری دنیا میں تیل اور گیس کی 10 بڑی کمپنیوں میں شمار کی جاتی ہے۔
پٹرول کی سپریم کونسل کے سربراہ متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ خلیفہ بن زاید آل نہیان ہیں۔ ’ادنوک گروپ‘ 16 کمپنیوں پر مشتمل ہے۔ یہ پٹرول، گیس ، پٹرو کیمیکل، ٹرانسپورٹ اور مختلف خدمات انجام دے رہا ہے۔
امارات کی خبروں کے لیے ”اردو نیوز یو اے ای“ گروپ جوائن کریں

شیئر: