کشمیر میں برفانی تودے گرنے سے چار انڈین فوجی ہلاک

گذشتہ چند ہفتوں میں یہ برفانی تودے گرنے کا تیسرا ایسا واقعہ ہے (فائل فوٹو اے ایف پی)
انڈیا کے زیر انتظام کشمیر میں برفانی تودوں کے گرنے کے دو مختلف واقعات میں ہندوستانی فوج کے چار اہلکار ہلاک ہو گئے ہیں۔
برفانی تودے گرنے کا ایک واقعہ تنگدھار سیکٹر میں پیش آیا جبکہ دوسرا واقعہ لائن آف کنٹرول کے پاس گریز سیکٹر میں پیش آیا جہاں برفانی تودے کی زد میں گشت پر مامور ایک ایک فوجی دستہ آ گیا۔
خبررساں ادارے پی ٹی آئی کے مطابق فوج نے بدھ کو اپنے بیان میں کہا ہے کہ منگل کے روز موسم کی خرابی کی وجہ سے دو مختلف حادثات میں چار فوجی ہلاک ہو گئے ہیں۔
فوج نے مزید کہا کہ جو فوجی چوکی تنگدھار سیکٹر میں برفانی تودے کی زد میں آئی تھی یا پھر گریز سیکٹر میں جو پیٹرولنگ ٹیم برفباری کی زد میں آئی حفاظتی ٹیم نے اس کی نشاندہی کی اور وہاں سے فوجیوں کو بہ حفاظت نکالا۔
لیکن فوج کی جانب سے جاری بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ’طبی اور بچانے والی ٹیم کی تمام تر کوششوں کے باوجود تنگدھار میں تین فوجی جبکہ گریز میں ایک فوجی ہلاک ہو گئے۔‘
گذشتہ چند ہفتوں میں یہ برفانی تودے گرنے کا تیسرا ایسا واقعہ ہے جس میں ہندوستانی فوجی ہلاک ہوئے ہیں۔
اس سے قبل 18 نومبر کو سیاچن گلیشیئر میں رونما ہونے والے حادثے میں چار فوجی اور دو قلی ہلاک ہو گئے تھے جبکہ 30 نومبر کو جنوبی سیاچن گلیشیئر میں تقریبا 18000 فٹ کی بلندی پر برفانی تودے گرنے سے دو فوجی ہلاک ہو گئے۔
سیاچن دنیا کا سب سے بلندی پر واقع فوجی علاقہ ہے اور وہاں فوجیوں کی تعیناتی ایک مہنگا کام ہے۔ ناقدین کا کہنا ہے کہ اس بلندی پر فوجیوں کے لیے مناسب انتظامات نہیں ہیں۔

شیئر: