حسان نیازی ایک بار پھر ایکشن میں

نئی ویڈیو میں حسان نیازی گاڑی کے دروازے کو ٹھوکر مارتے نظر آتے ہیں، فائل فوٹو
وزیراعظم خان کے بھانجے حسان نیازی ایک بار پھر خبروں میں ہیں، پی آئی سی پر حملے میں تو ان کی مشتعل وکلا کے ساتھ  تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھیں جن سے حتمی طور پر یہ نہیں کہا جا سکتا تھا کہ وہ بھی اس حملے میں ملوث تھے لیکن اس بار ان کی ایک ویڈیو گردش کر رہی ہے جس میں انہیں مکمل ایکشن میں دیکھا جا سکتا ہے۔
سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں حسان نیازی کو مبینہ طور پر گاڑی کے ساتھ معمولی ٹکر پر ڈرائیور سے الجھتے دیکھا جا سکتا ہے۔ ویڈیو میں حسان نیازی ڈرائیور کے ساتھ تلخ کلامی کرتے، گاڑی کی چابیاں نکالتے اور  دروازے پر ٹھوکر مارتے نظر آرہے ہیں۔
حسان نیازی کی ویڈیو جیسے ہی وائرل ہوئی سوشل میڈیا صارفین نے ٹوئٹر کا مورچہ سنبھال لیا۔
کچھ صارفین کا پارہ تو اتنا ہائی ہوا کہ حسان نیازی کو ہٹلر ہی کہہ ڈالا۔
ٹوئٹر صارف پر نیا خان نے حسن نیازی کی جھگڑے کی ویڈیو ری ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ’حسان نیازی ایک بار پھر ایکشن میں! سڑکوں پر لوگوں سے جھگڑتے اور گالیاں دیتے ہوئے۔‘
نوشی گیلانی نامی ٹوئٹر صارف نے لکھا کہ ’جب کسی کو پہلے جُرم پر سزا نہ ملے تو وہ حسان نیازی بن جاتا ہے۔‘
تیمور اکرم نامی صارف نے لکھا کہ ’انہوں نے پہلے اسلام آباد میں ایف آئی اے  کے ایک افسر کو تھپڑ مارا، یہ پی آئی سی حملے میں بھی ملوث تھے اور اب یہ نیا کارنامہ، اور کتنی ڈھیل دینی ہے بھانجے کو؟‘
سوشل میڈیا صارفین جہاں وزیراعظم کے بھانجے کے اس اقدام کی مذمت کر رہے ہیں وہیں کچھ ایسے بھی ہیں جو ان کا نام وزیراعظم کے ساتھ جوڑنے پر میڈیا کو کھری کھری سنا رہے ہیں۔
ٹوئٹر صارف غلام عباس نے لکھا کہ ’میرا نام حسان نیازی ہے اور میں وزیراعظم کا بھانجا ہوں، لیکن یاد رکھیں اس سے پہلے حسان نیازی حفیظ اللہ نیازی کے بیٹے ہیں۔‘
وزیراعظم کے بھانجے حسان نیازی پی آئی سی حملہ کیس میں ضمانت پر ہیں۔ حسان نیازی پیشے کے اعتبار سے وکیل ہیں اور وزیراعظم عمران خان کے کزن حفیظ اللہ نیازی کے بیٹے ہیں۔

شیئر: