Sorry, you need to enable JavaScript to visit this website.

چھاپہ مار مہم جاری رہے گی، وزارت افرادی قوت

سعودی لیبر مارکیٹ میں نوے فیصد تک ڈسپلن آچکا ہے(فوٹو سبق)
سعودی وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود نے کہا ہے کہ  سعودی لیبر مارکیٹ میں نوے فیصد تک ڈسپلن آچکا ہے جبکہ ’تحفظ محنتانہ‘ قانون کا آخری مرحلہ دسمبر 2020 میں نافذ ہوگا۔  
اخبار 24 کے مطابق وزارت افرادی قوت نے بتایا کہ سال رواں 2020 کے شروع سے لے کر تیسری سہ ماہی کے آخر تک مملکت بھر میں تمام پیشوں اور تجارتی سرگرمیوں کی تفتیش کے سلسلے میں 4 لاکھ 35 ہزار سے زیادہ چھاپے مارے گئے ہیں۔ 
وزارت افرادی قوت نے بتایا کہ چھاپہ مہم کا بنیادی مقصد نجی اداروں و کمپنیوں کے مالکان سے قوانین محنت کی پابندی کرانا ہے۔ وزارت چاہتی ہے کہ لیبر مارکیٹ میں زیادہ سے زیادہ ڈسپلن آئے اور روزگار کا نیا ماحول برپا ہو۔ چھاپہ مہم سے یہ بات سامنے آئی کہ نوے فیصد تک لیبر مارکیٹ ڈسپلن میں ہے۔ 
 بیان میں وزارت افرادی قوت کا کہنا تھا کہ چھاپہ مہم جاری رہے گی۔ سعودائزیشن کے فیصلوں پرعمل درآمد کی مسلسل نگرانی ہوگی۔ تمام لوگوں سے اپیل کی گئی کہ اگر انہیں قانون محنت اور سعودائزیشن کے فیصلوں کی کوئی خلاف ورزی نظر آئے تو 19911 پر رابطہ کرکے یا معاللرسد ایپ کے ذریعے مطلع کریں۔
وزارت افرادی قوت کا کہنا ہے کہ تحفظ محنتانہ قانون کا 17 واں اور آخری مرحلہ یکم دسمبر 2020 سے نافذ ہوگا۔ اس کے تحت ایسے نجی اداروں کو بھی جن کے ملازمین کی تعداد ایک سے چار تک ہوگی۔ اپنے ملازمین کی تنخواہیں بینک اکاؤنٹ کے ذریعے ادا کرنے کے پابند ہوجائیں گے۔

شیئر: