Sorry, you need to enable JavaScript to visit this website.

دبئی: ایئرپورٹ، سنیما گھر اور فٹنس سینٹر بھی دوبارہ کھلیں گے

حفاظتی اقدامات کی پابندی نہ کرنے پر جرمانہ ہوگا (فوٹو، سوشل میڈیا)
دبئی کے ولی عہد شیخ حمدان بن محمد بن راشد  آل مکتوم نے دبئی میں عید کے چوتھے دن  بدھ سے اقتصادی اور تجارتی سرگرمیاں بحال کر نے کا اعلان کیا ہے . روزانہ صبح 6 سے رات گیارہ بجے تک تجارتی ادارے کھولے جائیں گے.
دبئی حکام نے تجارتی سرگرمیوں کی بحالی سے متعلق تفصیلات منگل 26 مئی کو جاری کی ہیں۔سنیما گھر اور سپورٹس سینٹر بھی کھلیں گے.

ٹرانزٹ مسافروں کی سہولت کےلیے ہوائی اڈے کھولے جائیں گے(فوٹو، ٹویٹر)

 متحدہ عرب امارات میں مقیم غیرملکیوں کی واپسی اور مختلف مسافروں کو ٹرانزٹ کی سہولت دینے کے لیے ائیر پورٹ کھلے گا.
ناک، گلے اور کان کے علاج سمیت تمام کلینکس کھولے جائیں گے. ڈھائی گھنٹے اور اس سے کم دورانیے والے آپریشن بھی کیے جاسکیں گے.
تعلیمی و تربیتی انسٹی ٹیوٹ، ٹریننگ سینٹر اور بچوں کے علاج کے مراکز کھلیں گے. سپورٹس اکیڈمیاں، فٹنس سینٹرز اور انڈور سپورٹس ہال کھلیں گے.
سماجی فاصلے  اور مسلسل سینیٹائزنگ کی پابندی کے ساتھ سینما گھر بھی کھولے جائیں گے.
دبئی مال اور ڈولفی ناریوم  مالز وغیرہ میں تفریحاتی سرگرمیوں کی اجازت ہوگی.
نیلام گھر وں میں آن لائن نیلامی کی اجازت ہوگی.
سرکاری خدمات کے ٹھیکہ مراکز بھی کھلیں گے.
 احتیاطی تدابیر کے تحت عوامی مقامات پر احتیاطی تدابیر کی پابندی کرنا ہو گی.

سماجی دوری کے اصول پر سختی سےعمل درآمد کیاجائے گا(فوٹو، سوشل میڈیا)

تمام اقتصادی و تجارتی مراکز کرفیو اوقات کے پابند ہوں گے.سماجی دوری کے سلسلے میں دو میٹر کا فاصلہ رکھا جائےگا.
بیرون ملک سے امارات واپس آنے والے 14 دن تک ہاؤس آئسولیشن کے پابند ہوں گے.
مسلسل سینیٹائزنگ کا اہتمام کرنا ہوگا اور ایک بار استعمال کیے جانے والے آلات اوروائرس سے بچاؤ کے لیے ایسی اشیا استعمال کرنا ہوں گی جو صرف ایک بار کے لیے خاص ہوں.
حفاطتی اقدامات کی خلاف ورزی کے لحاظ سے جرمانہ ہوگا.
12 برس سے کم عمر کے بچوں، 60 برس سے زیادہ عمر کے لوگوں اور لاعلاج امراض میں مبتلا افراد کو تجارتی مراکز، سینما گھروں، مالز ، سپورٹس سینٹرز اور تعلیمی مراکز آنے کی اجازت نہیں ہوگی.
 

شیئر: