’ہر روز افراتفری کی باتیں کی جاتی ہیں‘

عمران خان کے مطابق دنیا پاکستان کو سرمایہ کاری کے حوالے سے پرکشش ملک کے طور پر دیکھ رہی ہے (فوٹو: اے ایف پی)
پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ’ایک منظم مافیا جان بوجھ کر ہر روز افراتفری کی باتیں کرتا ہے تاکہ جو مثبت انتظامی تبدیلیاں ہم لے کر آ رہے ہیں ان کو ناکام بنایا جائے۔‘
وزیراعظم کے آفس سے جاری ہونے والی پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ عمران خان نے یہ بات اتوار کو دورہ لاہور میں وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار اور پنجاب اسمبلی کے اراکین سے ملاقات کے دوران کہی۔
انہوں نے مزید کہا کہ ’ایک منظم مافیا معاشرے میں حکومت کے خلاف منفی تاثر کو فروغ دے رہا ہے۔‘
وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ’پنجاب کی تاریخ میں پہلی مرتبہ بڑے جرائم پیشہ عناصر کے خلاف کارروائی ہوئی اور قبضہ مافیا قانون کی گرفت میں آئے ہیں۔‘
عمران خان نے یہ بھی کہا کہ ’میں واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ ہم ہرگز دباو میں نہیں آئیں گے۔ ہمیشہ چیلنجز کا سامنا کیا ہے اور انشاءاللہ آئندہ بھی کریں گے۔‘
وزیراعظم نے کہا کہ ’جب ہم نے حکومت سنبھالی تو ملک کو تاریخی خسارے کا سامنا تھا۔ روپے کی قدر مسلسل گر رہی تھی۔ ملک قرضوں میں ڈوبا ہوا تھا۔ الحمدللہ، آج صورتحال تبدیل ہو چکی ہے۔ روپے کی قدر میں توازن آگیا ہے۔‘
عمران خان نے اس بات کو بھی دہرایا کہ انہیں ’وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار پر بھرپور اعتماد ہے۔‘
ان کا کہنا تھا کہ صوبہ پنجاب میں بہترین انتظامی ٹیم لے کر آئے ہیں۔ انتظامیہ اور منتخب عوامی نمائندگان میں ہم آہنگی اور بہتر گورننس کے لیے ایک مربوط حکمت عملی مرتب کی جا رہی ہے تاکہ عوام الناس کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل ہو سکیں۔

عمران خان نے وزیراعلیٰ پنجاب پر ایک بار پھر اعتماد کا اظہار کیا۔ (فوٹو: ریڈیو پاکستان)

ان کا کہنا تھا کہ آج دنیا پاکستان کو سرمایہ کاری کے حوالے سے پرکشش ملک کے طور پر دیکھ رہی ہے۔
عمران خان کے بقول ’ڈیووس میں جس طرح ہمیں پذیرائی ملی ہے اس کی ماضی میں نظیر نہیں ملتی۔ ڈیووس میں دنیا کی بڑی سرمایہ کار کمپنیوں کے وفد شریک ہوتے ہیں۔ ان سب نے کہا کہ پاکستان میں سرمایہ کاری کے بے پناہ مواقع اور صلاحیت ہے۔‘

شیئر: