ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال، مریض بے حال

کراچی: ینگ ڈاکٹرز کی جانب سے کئے گئے مطالبات حکومتی سطح پر تسلیم کئے جانے کے باوجود سندھ میں جاری احتجاج تیسرے روز بھی جاری ہے۔ ذرائع کے مطابق گزشتہ روز سندھ حکومت اور ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے مابین معاملات طے پا گئے تھے، جس کے بعد الاﺅنسز میں اضافے کی منظوری کے لیے سیکرٹری صحت نے وعدہ کیا تھا، تاہم اس کے بعد دوبارہ کوئی رابطہ نہیں کیا گیا، جس پر ینگ ڈاکٹرز کا موقف ہے کہ حکومت جائز مطالبات منظور نہیں کررہی ۔ دوسری جانب ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث آج تیسرے روز بھی سرکاری اسپتالوں میں او پی ڈیز بند ہیں جس سے مریضوں کو شدیدمشکلات کا سامنا ہے ۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز محکمہ صحت کے ترجمان نے بتایا تھا کہ ینگ ڈاکٹرز کے الاﺅنسز میں اضافے کا مطالبہ تسلیم کرلیا گیا ہے جس کے تحت مختلف گریڈز میں اضافہ 25 ہزار سے 75 ہزار تک کیا گیا ہے ۔ مطالبات کی منظوری کے بعد صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے ڈاکٹروں سے مریضوں کی تکالیف کو مدنظر رکھتے ہوئے ہڑتال ختم کرنے کی اپیل کی تھی۔
 
 

شیئر: